من میں سپنے اگر نہیں ہوتے

0
64
Romantic Poetry in Urdu
- Advertisement -

من میں سپنے اگر نہیں ہوتے

ہم کبھی چاند پر نہیں ہوتے

صرف جنگل میں ڈھونڈھتے کیوں ہو

بھیڑیے اب کدھر نہیں ہوتے

کب کی دنیا مسان بن جاتی ہے

- Advertisement -

اس میں شاعر اگر نہیں ہوتے

کس طرح وہ خدا کو پائیں گے

خود سے جو بے خبر نہیں ہوتے

پوچھتے ہو پتہ ٹھکانا کیا

ہم فقیروں کے گھر نہیں ہوتے

مأخذ : کتاب : Gazal,Dushyant Ke Bad

شاعر:ادے بھانو ہنس

مزید غزلیں پڑھنے کے لیے کلک کریں۔

- Advertisement -

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here