زندگی کو کر گیا جنگل کوئی

0
159
Romantic Poetry in Urdu
- Advertisement -

زندگی کو کر گیا جنگل کوئی

لے گیا خوشیوں کا میری پل کوئی

دھنس رہا ہے ہر قدم میرا یہاں

راہ میں درپیش ہے دلدل کوئی

کوئی کنکر پھینکنے والا نہیں

- Advertisement -

کیسے پھر ہو جھیل میں ہلچل کوئی

زندگی تھی ایک صحرا کی طرح

زندگی کو کر گیا جل تھل کوئی

ہوش بھی اپنا نہیں رہتا مجھے

کر رہا کتنا ظفرؔ پاگل کوئی

شاعر:ظفر اقبال ظفر

مزید غزلیں پڑھنے کے لیے کلک کریں۔

- Advertisement -

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here