میں شب ہجر کیا کروں تنہا

0
88
Romantic Poetry in Urdu
- Advertisement -

میں شب ہجر کیا کروں تنہا

یاد میں تیری گم رہوں تنہا

ہیں ادھر گردشیں زمانے کی

ہے مقابل ادھر جنوں تنہا

کتنے بے نور ہیں یہ ہنگامے

- Advertisement -

میں بھرے شہر میں بھی ہوں تنہا

آدمی گھر گیا مسائل میں

رہ گئی زیست بے سکوں تنہا

وہ تو اس دور کے نہیں انساں

مل گیا ہے جنہیں سکوں تنہا

ہم سفر جب نیازؔ اندھیرے ہیں

شمع گھبرا رہی ہے کیوں تنہا

مأخذ : Naghma-e-Shuoor

شاعر:عبدالمتین نیاز

مزید غزلیں پڑھنے کے لیے کلک کریں۔

- Advertisement -

LEAVE A REPLY

Please enter your comment!
Please enter your name here